Ek Lamha Bhi Guzaaru Bhala Kyu'n Kisi Ke Saath / اک لمحہ بھی گزاروں بھلا کیوں کسی کے ساتھ

اک لمحہ بھی گزاروں بھلا کیوں کسی کے ساتھ
گزرے تمام عمر مری آپ ہی کے ساتھ

جب ہاتھ دوستی کا بڑھا یا خوشی کے ساتھ
اس نے مجھے قبول کیا خوش دلی کے ساتھ

دل سے کیا ہے یاد اُسے میں نے جب کبھی
اظہار - ہجر کرتی ہیں آنکھیں نمی کے ساتھ

اک بار میرے یار نے  ایسا کیا مزاق
اللہ رے نہ ہو کبھی ایسا  کسی کے ساتھ

 اس طرح منسلک ہوا اردو زبان سے
ملتا ہوں اب سبھی سے بڑی عاجزی کے ساتھ

باقی رہی ہے  دل میں یہ  حسرت تمام عمر
مہتاب کا دیار ہو اُس کی گلی کے ساتھ
(بشیر مہتاب)

Comments

POPULAR POSTS:

Gazal -Bachpann / غزل - بچپن

Mera Nahi Raha Tu, Mai Tera Nahi Raha / میرا نہیں رہا تُو, میں تیرا نہیں رہا

Haseen Dil Ruba Chandni Gulbadan Hai / حسیں دلربا چاندنی گل بدن ہے

Yaar Be-Khabar Ho Tum / یار بے خبر ہو تم

Sab ki mojudgi samjhta hai/ سب کی موجودگی سمجھتا ہے