Naye Lamhaat Ko Roshan Banana Chahta HooN / نئے لمحات کو روشن بنانا چاہتا ہوں

نئے لمحات کو روشن بنانا چاہتا ہوں
میں ہاتھوں کی لکیروں کو مٹانا چاہتا ہوں

اُسے  پاکر اُسے پھر سے گنوانا چاہتا ہوں
میں  اپنے دل کی ہمت آزمانہ چاہتا ہوں

کھلی آنکھیں مجھے سپنے دکھایا کرتی ہیں جو
وہ سپنے ایک دن سچ کر دکھانا چاہتا ہوں

رہے اجداد کی زندہ روایت اس لئے میں
بڑی چاہت سے اک تختی بنانا چاہتا ہوں

جہاں اس دور کی الفت کو دفنایا گیا ہے
وہاں میں ایک دو آنسوں بہانا چاہتا ہوں

- بشیر مہتاب

naye lamhaat ko roshan banana chahta hoo.n
mei.n haatho.n ki lakeero.n ko mitaana chahta hoo.n

usay paakar usay phir say ganwana chahta hoo.n
mei.n apnay dil ki himmat aazmaana chahta hoo.n

khuli aankhei.n mujhay sapnay dikhaya karti hai.n jo
wo sapnay aik din sach kar dikhaana chahta hoo.n

rahay ajdaad ki zinda rawayat iss liye mei.n
baDi chahat say ik taKHti banaana chahta hoo.n

jahaa.n iss dor ki ulfat ko dafnaya gaya hai
waha.n mei.n aik do aansoo.n bahaana chahta hoo.n

- Bashir Mehtaab

Comments

POPULAR POSTS:

Gazal -Bachpann / غزل - بچپن

Mera Nahi Raha Tu, Mai Tera Nahi Raha / میرا نہیں رہا تُو, میں تیرا نہیں رہا

Haseen Dil Ruba Chandni Gulbadan Hai / حسیں دلربا چاندنی گل بدن ہے

Yaar Be-Khabar Ho Tum / یار بے خبر ہو تم

Ye Kon Aagaya Hai Ye Kaisi Bahaar Hai / یہ کون آگیا ہے یہ کیسی بہار ہے